کراچی اسٹاک سرمایہ کارتذبذب کا شکار, انڈیکس سے 199 پوائنٹس گر گئے

کراچی(بزنس رپورٹر)کراچی اسٹاک مارکیٹ گزشتہ ہفتے بھی شدید کاروباری اتار چڑھاو¿کی زد میں رہی اور ایک ہفتہ کی ٹریڈنگ کے دوران34ہزار پوائنٹس کی سطح عبور کرجانیوالا انڈیکس کاروباری ہفتہ کے اختتام پر 33500 پوائنٹس کی سطح تک گر گیا،5کاروباری دنوں میں مارکیٹ کے سرمائے میں 3ارب روپے سے زائد کی کمی ریکارڈ کی گئی۔ مارکیٹ میں کاروباری ہفتہ کا آغاز مایوس کن ہوا ،انڈیکس پہلے دن34ہزار پوائنٹس کی بلند سطح عبور کر گیا لیکن اس سطح کو برقرا ر نہ رکھ سکا۔ مارکیٹ کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گزشتہ ہفتہ5کاروباری دنوں میں سے 4دن مارکیٹ مندی کی زد میں رہی اور اس دوران انڈیکس 505.3پوائنٹس تک گھٹ گیا جبکہ ایک دن رونما ہونیوالی تیزی کے سبب مارکیٹ میں 306پوائنٹس ریکور ہوئے۔ماہرین کے مطابق آئندہ بجٹ میں ٹیکس پالیسی کے حوالے سے سرمایہ کار تذبذ ب کا شکار ہیں جبکہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت میں کمی کے باعث پٹرولیم سیکٹر میں سرمایہ کاروں کی دلچسپی میں بھی کمی دیکھنے میں آئی ہے ، نئے ٹریگر کی عدم موجودگی کی وجہ سے مارکیٹ تنزلی کا شکار ہے اور بازار حصص کی سرگرمیاں منجمد پڑی ہیں۔ماہرین کے مطابق انڈیکس34ہزار پوائنٹس کے قریب ہے اس لیے مارکیٹ تکنیکی درستگی کا شکار ہے تاہم نئی سرمایہ کاری اور بازار حصص میں منافع بخش حصص کی خریداری میں تیزی سے مارکیٹ بلندیوں کی نئی سطح کو چھو سکتی ہے۔ مارکیٹ کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق پیر تاجمعہ کے ایس ای 100انڈیکس میں199.66پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے کے ایس ای 100انڈیکس 33729.96پوائنٹس سے کم ہوکر 33530.30پوائنٹس پر آگیا، اسی طرح کے ایس ای 30انڈیکس 131.40پوائنٹس کی کمی سے 21579.85پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس23588.90پوائنٹس سے گھٹ کر 23541.55پوائنٹس پر بند ہوا۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 3ارب 28کروڑ50لاکھ 93ہزار591روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ73کھرب 5ارب80کروڑ 91لاکھ70ہزار152روپے سے کم ہوکر 73کھرب 2ارب52کروڑ 40لاکھ 76 ہزار561 روپے پر آگیا۔گزشتہ ہفتہ مارکیٹ میں زیادہ سے زیادہ21کروڑ 46 لاکھ 24ہزار حصص کا کاروبار ہوا اور ٹریڈنگ ویلیو 11ارب روپے ریکارڈ کی گئی جبکہ کم سے کم کاروباری لین دین15کروڑ98لاکھ40ہزار حصص رہا اور اس دن ٹریڈنگ ویلیو8ارب روپے تک محدود دیکھا گیا،مجموعی طور پر 1767کمپنیوں کا کاروبار ہوا جن میں سے 695کمپنیوں کے حصص کے بھاو¿ میں اضافہ،982میں کمی اور90کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے بائیکو پٹرولیم،کے الیکٹرک ،فوجی سیمنٹ اینگرو فرٹیلائزر،بینک آف پنجاب،پاک الیکٹرون،ٹی آر جی پاک،لوٹی کیمیکل سرفہرست رہے۔

Print Friendly, PDF & Email