کاروباری ہفتے کے آخری روز تیزی، 50پوائنٹس تک محدود

کراچی(بزنس رپورٹر)کراچی اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کا اختتام مثبت نوٹ پر ہوا،تاہم کے ایس ای100انڈیکس ٹریڈنگ کے دوران 34100 پوائنٹس کی حد عبور کرنے کے باوجود 34000پوائنٹس کی حد بھی برقرار نہ رکھ سکا اور 50پوائنٹس اضافے کے بعد 33993پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔کراچی اسٹاک مارکیٹ میں کاروباری ہفتے کے آخری روز دیکھی جانے والی تیزی کے باعث مارکیٹ سرمائے میں13ارب81کروڑ روپے سے زائد کا اضافہ دیکھا گیا جس کے نتیجے میں مارکیٹ سرمائے کا مجموعی حجم76کھرب83ارب روپے کی سطح سے بڑھ کر76کھرب97ارب روپے کی سطح پر پہنچ گیا،آخری کاروباری روز ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں متوقع اضافے کے پیش نظر آئل سیکٹر میں حصص کی خریداری دیکھی گئی جس کے نتیجے میں کاروباری حجم میں 2کروڑ سے زائد حصص کا اضافہ دیکھا گیا اور کاروباری حجم24کروڑ سے بڑھ کر26کروڑ حصص کی سطح پر جا پہنچا،ٹریڈنگ کے دوران آئل اینڈ گیس انڈیکس میں62پوائنٹس جبکہ بینکنگ انڈیکس میں178پوائنٹس کا اضافہ ہوا،مجموعی طور پر360کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جس میں سے 153کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 190 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی اور17کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام دیکھا گیا۔مارکیٹ ذرائع کے مطابق آئندہ ماہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں متوقع اضافے کی اطلاعات کے باعث سرمایہ کاروں کی جانب سے آئل سیکٹر میں حصص کی خریداری کا رجحا ن رہا جبکہ سرمایہ کاروں نے بینکنگ،مالیاتی اداروں اور سیمنٹ سیکٹر میں بھی سرگرمیاں دکھائیں،رفحان معیظ اور باٹا کے حصص کی قیمتوں میں سب سے زیادہ اضافہ دیکھا گیا جہاں رفحان معیظ کے حصص کی قیمت251روپے اضافے سے 11200 اور باٹا کے حصص کی قیمت 198.45روپے اضافے سے 4167.45 روپے رہی جبکہ ایکسائیڈ کے حصص کی قیمت 71.50 روپے کمی سے 1358.64اور ٹرائی پیک فلمز کے حصص کی قیمت 10.70روپے کمی سے 246.22روپے رہی،کے ایس ای 30 انڈیکس 53 پوائنٹس اضافے سے 22139 اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس44پوائنٹس اضافے سے 24397پوائنٹس پر بند ہوا۔

Print Friendly, PDF & Email