مالی سال کی تیسری سہ ماہی ; ای بینکنگ سودوں کے حجم میں 10 فیصد اضافہ

کراچی(بزنس رپورٹر)پاکستان رئیل ٹائم انٹربینک سیٹلمنٹ میکانزم نے مالی سال15 کی تیسری سہ ماہی کے دوران 198,250 سودے نمٹائے جن کی مالیت 51.1 ٹریلین روپے تھی۔ اس طرح مالی سال15کی دوسری سہ ماہی کے مقابلے میں حجم اور مالیت میں بالترتیب5 فیصد اور 21 فیصد اضافہ ظاہر ہوتا ہے۔‘پرزم ’ سودوں کی تعداد بڑھانے میں بڑا حصہ بین البینک رقوم کی منتقلی (آئی بی ٹی ایف) کا تھا جو تقریباً 6 فیصد بڑھی جبکہ ‘پرزم ’ سودوں کی مالیت بڑھانے میں سکیورٹیز کے تصفیے کا بڑا حصہ تھا جس میں تقریباً 45 فیصد اضافہ ہوا۔مالی سال15 کی تیسری سہ ماہی کے دوران انٹرنیٹ بینکاری سودوں کے حجم اور مالیت میں بالترتیب 10 فیصد اور 6 فیصد کی نمو ظاہر ہوتی ہے۔ پوائنٹ آف سیل سودوں کا حجم اور مالیت گذشتہ سہ ماہی کے مقابلے میں بالترتیب 1.4 فیصد اور 3 فیصد کم ہو گیا۔ مالی سال 15کی گذشتہ سہ ماہی کے مقابلے میں اس سہ ماہی کے دوران موبائل بینکاری سودوں کا حجم 15 فیصد گر گیا، تاہم سودوں کی مالیت 14 فیصد بڑھ گئی، اسی طرح اے ٹی ایم سودوں کے حجم میں گذشتہ سہ ماہی کی نسبت 2 فیصد اور مالیت میں 6 فیصد نمو دیکھی گئی۔ رئیل ٹائم آن لائن بینکنگ سودوں کا حجم گذشتہ سہ ماہی کے مقابلے میں 6 فیصد سے زائد بڑھا جبکہ مالیت میں 0.8 فیصد کی معمولی کمی دیکھی گئی۔ تیسری سہ ماہی کے دوران غیر مالی سودوں میں 4 فیصد سے زائد اضافہ ہوا۔رواں مالی سال کی تیسری سہ ماہی کے دوران اے ٹی ایمزکا نیٹ ورک 3.3 فیصد نمو کے ساتھ بڑھ کر 9,312 اے ٹی ایمز تک پہنچ گیا۔

Print Friendly, PDF & Email