سٹاک مارکیٹ:سرمایہ کاروں کو14ارب سے زائدنقصان

کراچی (بزنس رپورٹر ) کاروباری ہفتہ کے پہلے روز کراچی سٹاک مارکیٹ مندی کی زد میں رہی۔کے ایس ای 100 انڈیکس 34600 پوائنٹس کی سطح سے گھٹ کر 34500 پوائنٹس پرآگیا جبکہ مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کو 14 ارب سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا۔کراچی سٹاک مارکیٹ میں پیر کو کاروبار کے آغاز پر ملاجلا رجحان دیکھا گیا،ٹریڈنگ کے دوران سرمایہ کارفرٹیلائزر ، سیمنٹ اور توانائی سیکٹر میں سر گرم دکھائی دیے جسکی وجہ سے ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای 100 انڈیکس 34700پوائنٹس کی سطح عبور کرتا ہوا 34788 پوائنٹس پرجاپہنچا تاہم منافع خوری کی خاطر بعض سٹاکس میں حصص کی فروخت کے دباﺅ کی وجہ سے مارکیٹ مثبت سے منفی زون میں چلی گئی اورکے ایس ای 100 انڈیکس 34600,34700کی 2 بالائی حدوں سے کم ہوکر 34500 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔ پیر کو کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای 100 انڈیکس میں 86.64 پوائنٹس کی کمی واقع ہوئی اورکے ایس ای 100 انڈیکس 34656.94 پوائنٹس سے کم ہوکر 34570.30 پوائنٹس پر آگیا۔ٹریڈنگ ویلیو 17 ارب روپے ریکارڈ کی گئی۔کاروبار کے لحاظ سے جہانگیر صدیقی کمپنی 3 کروڑ 51لاکھ،اینگروفرٹیلائزر لمیٹڈ 2 کروڑ 12 لاکھ، ٹی آر جی پاک لمیٹڈ 1 کروڑ 53 لاکھ، پاک انٹرنیشنل بلک 1 کروڑ 44 لاکھ اور اینگروکارپوریشن 1 کروڑ 28 لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔

Print Friendly, PDF & Email