بازار حصص: انڈیکس میں 417 پوائنٹس کمی، 98 ارب ڈوب گئے

کراچی(بزنس رپورٹر)رواں ہفتے کے آغاز پر شروع ہونے والی مندی کے اثرات سے کراچی سٹاک مارکیٹ چوتھے کاروباری روز بھی نہ نکل پائی اور 100انڈیکس 417پوائنٹس کی شدید مندی کے بعد34000پوائنٹس کی حد کھو بیٹھا اور ٹریڈنگ کے اختتام پر34203پوائنٹس کی سطح سے گرکر33786پوائنٹس پر بند ہوا۔مارکیٹ میں 400پوائنٹس سے زائد کی شدید مندی کے باعث مارکیٹ سرمائے میں98ارب روپے سے زائد کی کمی دیکھی گئی جس کے باعث مارکیٹ سرمائے کا مجموعی حجم77کھرب91ارب روپے کی سطح سے گر کر76کھرب93روپے کی سطح پر آگیا تاہم کاروباری حجم میں 6کروڑ سے زائد حصص کا اضافہ دیکھا گیا جس کے بعد کاروباری حجم25کروڑ کی سطح سے بڑھ کر32کروڑ حصص کی سطح پرجا پہنچا،ٹریڈنگ کے دوران آئل اینڈ گیس انڈیکس میں220جبکہ بینکنگ انڈیکس میں349پوائنٹس کی زبردست کمی دیکھی گئی،مجموعی طور پر381کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 89کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،266کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں کمی اور26کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام دیکھا گیا۔مارکیٹ ذرائع کے مطابق سینیٹ انتخابات کے باعث ہونے والے سیاسی جوڑ توڑ،کراچی میں بدامنی کے بڑھتے ہوئے واقعات اور حالات مزید خراب ہونے کی خبروں نے سرمایہ کاری پر منفی اثرات مرتب کئے ہیں،گزشتہ روز ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر انڈیکس33493پوائنٹس کی کم ترین سطح پر جا پہنچا تھا،تاہم بعد ازاں حصص کی خریداری کے باعث تیزی کی شدت میں کمی آئی مگر انڈیکس34000پوائنٹس کی حد بحال نہ رکھ سکا اور 417پوائنٹس کمی سے 33786پوائنٹس پر بند ہوا۔رفحان میعظ اور انڈس ڈائنگ کے حصص کی قیمتوں میں سب سے زیادہ اضافہ دیکھا گیا جہاں رفحان میعظ کے حصص کی قیمت100روپے اضافے سے 11200اور انڈس ڈائنگ کے حصص کی قیمت44.90روپے اضافے سے 964.89روپے رہی جبکہ نیسلے کے حصص کی قیمت240روپے کمی سے 10560اور کولگیٹ پامولیو کے حصص کی قیمت68روپے کمی سے 1780روپے ریکارڈ کی گئی،کے ایس ای30انڈیکس286پوائنٹس کمی سے 21846اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس309پوائنٹس کمی سے 24389پوائنٹس پر بند ہوئے۔

Print Friendly, PDF & Email